چیچہ وطنی(آن لائن) پولیس کی حراست میں تشدد سے 35 سالہ نوجوان جاں بحق ۔ ورثاء کا احتجاج ۔ڈی پی او نے ایس ایچ او سمیت چار اہلکاروں کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرنے کا حکم دے دیا۔تفصیلات کے مطابق 3-4 اگست کی درمیانی رات کو بورے والا روڈ پر بیوپاری ابوذر عذیف اپنے دوست بیوپاریوں عبدالرشید ، ابوبکر ، ساجد ،ماجد ، اللہ بخش ،امان اللہ ،عنصر لیاقت اور آصف ملتان منڈی مویشیاں ایک مزدا ٹرک نمبر 3500 ایم ایل میں جارہے تھے کہ چک 93/12 ایل کے قریب ڈاکوؤں نے ناکہ پر روک لیا اور کلاشنکوف دکھا کر بیوپاریوں سے 32 لاکھ روپے کی نقدی اور 10 موبائل لوٹ کر فرار ہوگئے مزاحمت پر ڈاکوؤں کے تشدد سے تین بیوپاری شدید زخمی بھی ہوئے ۔پولیس شاہ کوٹ نے مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی ۔دوران تفتیش چک 26/14 ایل سے کبیر بلوچ کے بیٹے طارق بلوچ کو مدعی کی نشاندہی پرپولیس نے گرفتار کرلیا ۔ دوران تفتیش مبینہ پولیس تشدد سے طارق بلوچ بے ہوش ہوگیا تو اسے پولیس سول ہسپتال لے آئی جہاں طارق بلوچ نے دم توڑ دیا جس پر ورثاء نے لاش سڑک پر رکھ کر احتجاج کیا اور پولیس تشدد سے ہلاکت کے ذمہ داروں کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا مطالبہ کیا جس پر ڈی پی او ساہیوال نے ذمہ دار پولیس اہلکاروں ایس ایچ او سمیت چار کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرنے کا حکم دے دیا۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں