لاہور(ایس این این) پنجاب حکومت کی جانب سے لرنر ، ڈرائیونگ لائسنس اور تجدید لائسنس کی فیسوں میں اضافے کا فیصلہ کرلیا۔ ٹریفک پولیس حکام کے مطابق لائسنس کی فیس 5سال کی بجائے ہر سال وصول ہو گی۔ لرنر لائسنس کی 5سال کیلئے فیس60روپے مقرر تھی، حکومت نے ہرسال 500روپے لرنرفیس مقرر کر دی۔ موٹرسائیکل لائسنس کی 5سالہ فیس 550روپے تھی، اب لائسنس کیلئے ہر سال 500 روپے وصول کیے جائیں گے۔ موٹرسائیکل رکشہ کی 5سالہ فیس 550 روپے تھی، اب ہر سال500روپے مقرر کردی گئی۔ موٹرکاروجیپ کے لائسنس کی 5سالہ فیس950روپےتھی، اب موٹرکاروجیپ کے لائسنس کیلئے 1800روپے ہر سال وصول کیا جائے گا۔ لائٹ ٹرانسپورٹ کی 5سالہ فیس950تھی، اب ہر سال2000وصول ہو گا۔ ہیوی ٹرانسپورٹ کی5 سالہ فیس 450 تھی، اب ہرسال2000روپے دینا ہونگے۔ ٹریکٹرلائسنس کی 5سالہ فیس 450تھی ،اب ہر سال1000وصول کیا جائے گا۔ کمرشل ٹریکٹر کی5سالہ فیس 450تھی ،اب ہر سال 1500روپے دینا ہو گا۔ ٹریفک پولیس حکام کا کہنا ہے کہ معذور افراد کے لائسنس کی 5سالہ فیس20روپے مقرر تھی، معذور افراد کے ڈرائیونگ لائسنس کی فیس ختم کر دی گئی۔ اس کے علاوہ پبلک سروس وہیکل کی 5سالہ فیس 450مقرر تھی، اب ہرسال1500دینا ہو گا۔ باقی کیٹگریز کی ڈرائیونگ لائسنس فیس 100روپے سے بڑھا کر1000مقرر کردی گئی۔ ٹریفک پولیس حکام کا کہنا ہے کہ لائسنس فیسوں میں 20سال بعد 1ہزارفیصدتک کا اضافہ کیا گیا، عوامی آگاہی کیلئے فیسوں میں اضافے کا اشتہار جلد شائع کیا جائے گا۔ یکم جنوری 2024سے پنجاب میں نئی فیسوں کا اطلاق ہو جائے گا۔

جواب چھوڑ دیں

براہ مہربانی اپنی رائے درج کریں!
اپنا نام یہاں درج کریں